dharna-w 45

مذاکرات ناکام صبح 9سےموبائل فون سروس بند کرنے کا حکومتی فیصلہ

حکومت کا ملک بھر میں موبائل فون سروس بند کرنے کا فیصلہ
آسیہ معلونہ کی رہائی کیخلاف ملک بھر میں‌دن بھر احتجاج جاری رہا رات گئے حکومت کی جانب سے مذاکراتی ٹیم دھرنے والوں سے مذاکرات کے لیے بھیجی گئی جس میں وفاقی مزہبی اموراوردیگر وفاقی پنجاب کے صوبائی وزرائ نے مذاکرات کیے مذاکرات کسی نتجے پر نہیں پہنچ سکے اور سخت لہجوں کے ساتھ اختتام پزیر ہوگئے تحریک لبیک کے رہنماون کی جانب سے مذاکراتی کی ناکامی کا اعلان کرنے کا ساتھ آج ملک بھر میں‌پہ جام کا اعلان کردیا ،
dharna-w
ملک بھر میں کل صبح 9 بجے سے رات 9 بجے تک موبائل فون سروس مکمل طور پر بند رہے گی۔ تفصیلات کے مطابقآسیہ بی بی کیس کا فیصلہ آنے کے بعد ملک بھر خاص کر لاہور میں حالات شدید کشیدہ ہیں۔ شدید احتجاجی مظاہروں کے باعث ملک کی بیشتر شاہراہیں بند ہیں۔
جبکہ کشیدہ حالات کے باعث حکومت نے ملک بھر میںموبائل فون سروس بند کرنے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔ حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ ملک بھر میں کل صبح 9 بجے سے رات 9 بجے تک موبائل فون سروس مکمل طور پر بند رہے گی۔ واضح رہے کہ سپریم کورٹ کےآسیہ بی بی سے متعلق گذشتہ روز دئے جانے والے فیصلے کے بعد سے ہی ملک میں احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔
صوبائی دارالحکومت لاہور میں احتجاج کے پیش نظر میٹرو بس سروس بند ہے جبکہ مال روڈ کی طرف جانے والے راستے بھی بند ہیں
۔dahrna
شہر کے بیشتر علاقوں میں موبائل فون اور انٹرنیٹکی سروس بھی معطل ہے۔ کراچی میں بھی کئی اہم سڑکوں پر دھرنے جاری ہیں جبکہ پبلک ٹرانسپورٹ نہ ہونے کے باعث عوام دہری مشکلات کا شکار ہیں۔ امن و امان کی صورتحال بگڑنے پر آج صوبہ پنجاب اور صوبہ خیبر پختونخواہ میں تمام جب کہ سندھ میں نجی تعلیمی ادارے بند رہے۔ پنجاب بھر میں کئی دفاتر اور دکانیں بھی بند رہیں۔
سندھ میں پرائیویٹ اسکولز ایسوسی ایشن نے امن و امان کی صورتحال بگڑنے پر تعلیمی ادارے بند رکھنے کا اعلان کیا تھا۔ پنجاب کے تمام ثانوی تعلیمی بورڈز کے تحت بارہویں جماعت، راولپنڈی تعلیمی بورڈ نے انٹرمیڈیٹ کے ضمنی امتحانات، ملتان میں وفاقی تعلیمی بورڈ کے تحت پانچویں اور آٹھویں جماعت کے امتحانات ملتوی کردیے گئے۔ جن کی نئی تاریخ کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔
dharna3
البتہ بلوچستان میں تمام نجی و سرکاری تدریسی مراکز کُھلے رہے۔واضح رہے کہ آسیہ بی بی کیس سے متعلقسپریم کورٹ کےفیصلے کے خلاف ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے جاری ہیں جہاں مظاہرین نے ٹائروں کے علاوہ موٹرسائیکلوں کو بھی نذر آتش کر دیا وہیں ملک کی اہم شاہراہوں
ajwajw
بالخصوس لاہور کی ہائی ویز اور دیگر اہم شاہراہوں کو ٹریفک کے لیے بند کر دیا گیا ہے۔ سڑکیں بند ہونے کی وجہ سے شہریوں کو گذشتہ روز سے ہی شدید مشکلات کا سامنا ہے جبکہ شہری گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں