e1 50

تبلیغی جماعت کے امیر حاجی عبدالوہاب انتقال کر گئے

کراچی (نیوز اخبارالمدارس)حاجی عبدالوہاب گزشتہ ہفتے ڈینگی بخار میں مبتلا ہوئے اور لاہور کے نجی اسپتال میں دوران علاج اپنے خالق حقیقی سے جاملے۔ زندگی بھر اسلام کی دعوت دینے والے حاجی عبدالوہاب کی نماز جنازہ بعد نماز مغرب پنڈال اجتماع گاہ سندر روڈ رائیونڈ میں ادا کی جائے گی۔تبلیغ کے داعی حاجی عبدالوہاب کا پورا نام راؤ محمد عبدالوہاب تھا اور 1923 میں دہلی میں پیدا ہوئے، تقسیم ہند کے بعد ٹوپیاں والا بورے والا ضلع وہاڑی منتقل ہوئے۔ انہوں نے تعلیم گورنمنٹ اسلامیہ کالج لاہور سے حاصل کی اور بطور تحصیلدار فرائض بھی سرانجام دیے۔مولانا عبد الوہاب تبلیغی جماعت کے بانی محمد الیاس کاندھلوی کے زمانے سے ہی تبلیغی جماعت سے منسلک ہوئے اور وہ پاکستان کی تبلیغی جماعت کے تیسرے امیر تھے۔مولانا عبدالواہاب کے انتقال پر اظہار افسوس،وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے حاجی عبدالوہاب کے انتقال پر دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان کی دینی خدمات کو خراج تحسین کیا۔وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ دین اسلام اور تبلیغِ دین کے لئے حاجی عبدالوہاب کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔وفاقی وزیر مذہبی امور صاحبزادہ پیر نورالحق قادری نے حاجی عبدالوہاب کے انتقال پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے ان کے لواحقین سے تعزیت کی اور مرحول کے درجات کی بلندی کے لیے بھی دعا کی۔امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے مولانا عبد الوہاب کے انتقال پر دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم نے پوری زندگی اسلام کی دعوت و تبلیغ کا کام کیا، اسلام کی تبلیغ و اشاعت کے لیے مولانا کی خدمات ناقابل فراموش ہیں۔پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز نے اپنے تعزیتی بیان میں کہا کہ حاجی عبدالوہاب کا انتقال عالم اسلام کے لیے ایک بڑا نقصان ہے،انہوں نے امن، محبت، بھائی چارے، خدمت گزاری کو اپنا اوڑھنا بچھونا بنایا، اللہ کریم مولانا عبدالوہاب سے وابستہ تمام افراد کو صبر عطا فرمائے۔مسلم لیگ (ن) کے رہنما احسن اقبال نے تبلیغی جماعت کے امیر کے انتقال پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حاجی عبدالوہاب کے انتقال سے مسلم دنیا ایک جید عالم سے محروم ہوگئی، دین اسلام کے لیے ان کی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں