5 0

وزیراعظم عمران خان سے ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف کی ملاقات

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان سے ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف نے ملاقات کی۔

پاکستان کے دورے پر موجود ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے وزیراعظم ہاؤس میں وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی، اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی بھی موجود تھے جب کہ اس دوران پاک ایران دو طرفہ تعلقات پر بات چیت کی گئی۔

اعلامیے کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے پاک ایران دو طرفہ تعلقات پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دورہ ایران کے دوران طے پانے والے اہم فیصلوں پر عمل درآمد سے باہمی تعاون کو فروغ ملے گا۔

انہوں نے کہا کہ زائرین کے لیے بارڈر کھولنے اور تجارت بڑھانے سے دونوں ممالک کو فائدہ پہنچے گا، پاک ایران بارڈر پر سیکیورٹی اقدامات کیے جائیں گے، سیاسی اور معاشی سطح پر تعلقات میں وسعت ہونی چاہیے۔

وزیر اعظم عمران خان نے خلیج میں برھتی ہوئی کشیدگی پر تشویش کا اظہار کیا اور ایرانی وزیرخارجہ سے گفتگو میں کہا کہ جنگ مسائل کا حل نہیں، خطے میں بڑھتی ہوئی کشیدگی علاقائی امن سمیت کسی کے فائدے میں نہیں، خطے کے تمام ممالک کو کشیدگی کم کرنے میں کردار ادا کرنا ہوگا۔

ایرانی وزیرخارجہ کی دفترخارجہ آمد
اس سے قبل جواد ظریف نے وزارت خارجہ کا دورہ کیا جہاں ایران اور پاکستان کے درمیان میں وفود کی سطح پر مذاکرات ہوئے جن میں دوطرفہ تعلقات اور علاقائی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے امور پرتبادلہ خیال کیا گیا۔

مذاکرات میں فریقین نے وزیراعظم عمران خان کے حالیہ دورہ ایران میں فیصلوں اور عملدرآمد پر اطمینان کا اظہار کیا جب کہ دوطرفہ معاملات پر تعاون بدستور جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا۔

اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ خطے میں کشیدگی کسی کے مفاد میں نہیں، پاکستان تمام تصفیہ طلب امور کو سفارتی سطح پر حل کرنے کا حامی ہے، تمام اسٹیک ہولڈرز کو تحمل اور بردباری کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے، پاکستان خطے میں امن کے قیام اورکشیدگی میں کمی کیلئے اپنا کرداراداکرنے کے لیے کوشاں رہے گا۔

ایرانی وزیر خارجہ نے پرتپاک خیر مقدم پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا شکریہ ادا کیا جب کہ ان کا کہنا تھا کہ خطے میں قیام امن کے لیے پاکستان کی کاوشوں کو قدرکی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں