پاناما کیس کا فیصلہ آنے میں چند گھنٹے باقی

1

اسلام آباد: سپریم کورٹ کا 5 رکنی بینچ پاناما کیس کا فیصلہ آج سنایا جا رہا ہے جس کے لیے عدالت عظمیٰ کے کورٹ روم نمبر ایک میں تمام تر انتطامات مکمل کر لئے کئے ہیں۔
جسٹس آصف سعید کھوسہ، جسٹس شیخ عظمت سعید، جسٹس اعجاز افضل، جسٹس گلزار احمد اور جسٹس اعجازلالحسن پر مشتمل پانچ رکنی بینچ نے روزانہ کی بنیاد پر سماعت کے بعد پانامہ کیس کا فیصلہ 23 فروری کو محفوظ کیا تھا۔ 57 روز فیصلہ محفوظ رکھے جانے کے بعد سپریم کورٹ کی عدالت نمبر 1 میں دوپہر 2 بجے فیصلہ سنایا جائیگا۔
سپریم کورٹ میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں، فیصلہ سننے کے لئے خصوصی پاسز کے حامل افراد ہی عدالت جا سکیں گے۔ سپریم کورٹ کی جانب سے ہر فریق کو 15،15 پاسز جاری کئے گئے ہیں۔ پاکستان تحریک انصاف کے جن 15 رہنماؤں کو پاسز جاری کئے گئے ہیں ان میں عمران خان، شاہ محمود قریشی، جہانگیر ترین، شفقت محمود، علیم خان، اسد عمر، عامر کیانی، شعیب صدیقی، عارف علوی، اسحاق خاکوانی، شیری مزاری، نعیم الحق، اعجاز چودھری، فواد چودھری، نعیم بخاری اور سرور خان شامل ہیں۔
پاناما کیس کے فیصلے کو مدنظر رکھتے ہوئے ریڈ زون میں سیکیورٹی انتہائی سخت کر دی گئی ہے۔ سیکیورٹی پلان کے تحت سرکاری ملازمین کو ان کے محکمانہ کارڈز اور باقی کسی شخص کو خصوصی انٹری پاس کے بغیر ریڈ زون میں داخلے کی اجازت نہیں ہے۔ ریڈ زون میں مجموعی طور پر1200 پولیس افسران واہلکار تعینات ہیں جب کہ رینجرز اور پولیس کی موبائل پٹرولنگ بھی مسلسل جاری ہے، ضرورت پڑنے پر افسران و اہلکاروں کو تازہ دم نفری سے تبدیل کیا جائے گا لیکن متعلقہ افسر کی اجازت کے بغیر اہلکاروں کو اپنی ڈیوٹی کا مقام نہ چھوڑنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ وفاقی دارالحکومت کی تمام اہم مارکیٹوں، شاہراؤں، شاپنگ سینٹرز، پارکس اور سرکاری ونجی دفاترکی سیکیورٹی بھی ہائی الرٹ کردی گئی ہے جہاں پر مجموعی طور پر 3500 پولیس افسران و اہلکارتعینات کئے گئے۔
وفاقی پولیس حکام کی طرف سے ضلع بھرکے پولیس افسران کوسختی کے ساتھ احکامات جاری کئے گئے ہیں کہ کسی بھی علاقہ میں کسی قسم کا امن وامان کا مسلہ پیدا ہوا تومتعلقہ زون کے ایس پیز اور ایس ایچ اوز کے خلاف ایکشن لیاجائے گا لہذا تمام افسران اپنے اپنے علاقوں میں سیکیورٹی انتظامات کی خودنگرانی کریں۔

16total visits,3visits today

Add a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *