ضمیر اور دامن صاف ہے، استعفیٰ نہیں دوں گا، وزیراعظم


وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہےکہ میرا ضمیر اور دامن صاف ہے سازشی ٹولے کے کہنے پر استعفیٰ نہیں دوں گا۔
وزیراعظم کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس کے دوران 64 نکاتی ایجنڈے پر مشاورت کی گئی جب کہ اس دوران کابینہ ارکان کو جے آئی ٹی کی رپورٹ پر بھی بریفنگ دی گئی۔

اجلاس کے شرکاء نے وزیراعظم پر مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کو استعفیٰ دینے کی کوئی ضرورت نہیں۔

جب کہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ 1937 سے ہمارا آبائی کاروبار ہے جو فیملی کے کسی بھی شخص کے سیاست میں آنے سے پہلے کا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) نے استعفے کا مطالبہ کرنے والوں کے مجموعی ووٹوں سے زیادہ ووٹ لیے، میرا ضمیر اور دامن صاف ہے، جتنے بھی مطالبے کرلیں سازشی ٹولے کے کہنے پر استعفیٰ نہیں دوں گا۔

انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی رپورٹ ذاتی کاروبار پر مفروضوں اور الزامات کا مجموعہ ہے جب کہ رپورٹ میں استعمال کی گئی زبان میں بدنیتی نظر آتی ہے۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ میرے اور شہباز شریف کے کسی بھی دور حکومت کی کوئی کرپشن ہے تو ثبوت لائے جائیں، ملک میں اربوں روپے کے منصوبے لگ رہے ہیں، اگر ہم نے کسی بھی منصوبے میں کرپشن کی تو بتایا جائے

102total visits,1visits today