وفاق المدارس نے پنجاب حکومت کےچیریٹیز ایکٹ کو مسترد کردیا

wafaqچیریٹیز ایکٹ اسلامی تعلیمات اور بنیادی انسانی حقوق کے منافی ہے،مولانا حنیف جالندھری

کراچی: پنجاب حکومت کی طرف سے چیریٹیز ایکٹ کے نام سے دینی مدارس اور رفاہی اداروں کی مشکیں کسنے کی کوشش افسوسناک اور استعماری ایجنڈے کی تکمیل ہے،اسے مسترد کرتے ہیں،چیریٹیز ایکٹ اسلامی تعلیمات اور بنیادی انسانی حقوق کے منافی ہے،پاکستانی عوام اس کالے قانون کو ردی کی ٹوکری میں پھینک دیں گے،صدقات زکوة ادا کرتے ہوئے کسی مسلمان کو کسی سے این او سی لینے کی کوئ ضرورت نہیں،پہلے کی طرح دینی مدارس اور رفاہی اداروں کے خلاف یہ سازش بھی ناکام ہوگی،پاکستان مسلم لیگ کی حکومت اپنی مشکلات میں اضافہ کرنے سے گریز کرے ان خیالات کا اظہار وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے قائدین مولانا ڈاکٹر عبدالرزاق اسکندر،مولانا محمد حنیف جالندھری،مولانا انوار الحق اور دیگر نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں کیا-وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے قائدین نے چیریٹیز ایکٹ کے نام پر پنجاب حکومت کی طرف سے پیش کیے گئے ایکٹ کو دینی و فلاحی اداروں کی مشکیں کسنے کی کوشش،افسوس ناک اور قابل مذمت قرار دیا اور کہا کہ یہ ایکٹ استعماری قوتوں کے مقاصد کی تکمیل کی کوشش ہے جسے کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے-وفاق المدارس کے قائدین نے مدارس کو زکواة و صدقات دینی سے قبل اجازت لینے کو اسلامی تعلیمات اور بنیادی انسانی حقوق کے منافی قرار دیا اور اسے سختی سے مسترد کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی قوم ان بے جا پابندیوں پر مشتمل قانون کو ردی کی ٹوکری میں پھینک دے گی-انہوں نے کہا کہ کسی مسلمان کو زکواة صدقات ادا کرتے ہوئے کسی این او سی کی کوئ ضرورت نہیں -وفاق المدارس کے قائدین نے پنجاب حکومت کو خبردار کیا کہ وہ اپنی مشکلات میں اضافہ کرنے سے گریز کرے-وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے قائدین نے پنجاب حکومت سے اس ایکٹ کو فوری طور پر واپس لینے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ اگر دینی مدارس اور فلاحی و رفاہی اداروں کے خلاف پنجاب حکومت کی معاندانہ روش برقرار رہی تو راست اقدام پر مجبور ہوں گے#

223total visits,1visits today