نواز شریف تقریبا 800 گاڑیاں ہزاروں کارکنوں کے ہمراہ لاہور روانہ

kam2جگہ جگہ سابق وزیر اعظم کا شاندار استقبال ،جمعےتک کافلہ لاہور پہنچ جائے گا
اسلام آباد: سابق وزیر اعظم نواز شریف آج اپنی سیاسی طاقت کا پہلا مظاہرہ کرنے کے لیے پنجاب ہاؤس اسلام آباد سے لاہور کے لیے روانہ ہوئے ہیں۔پولیس کے مطابق ریلی میں تقریباً 7000 شرکا اور 800-850 گاڑیاں شامل ہیں۔ریلی میں میاں نواز شریف کے ہمراہ نون لیگ کی قیادت اور کابینہ کے ارکان بھی موجود ہیں۔نجی ٹیلی وژن اے آر وائی نے الزام لگایا ہے کہ فیض آباد انٹر چینج پر ریلی کے شرکا نے ان کے سٹاف کے ساتھ بدتمیزی کرنے کے ساتھ ساتھ اُنھیں سنگین تنائج کی دھمکیاں بھی دیں۔ وہاں پر موجود پولیس اہلکار کے بقول حکمراں جماعت سے تعلق رکھنے والے کارکن نجی ٹی وی کے عملے پر تشدد کے لیے آگے بڑھے لیکن وہاں پر موجود پولیس اہلکاروں نے بیچ بچاؤ کروا دیا۔وفاقی وزیر اور مسلم لیگ نون کے سینیئر رہنما سینیٹر مشاہد اللہ کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ نون کی قیادت کی کوشش ہے کہ جمعے کے روز تک لاہور پہنچ جائیںاس کے بعد مریم نواز نے ایک ٹویٹ میں کارکنوں کو ایسا کرنے سے روکا۔ ان کا کہنا تھا ’کارکن مسلم لیگ ن مخالف میڈیا ہاؤسز پر حملے کرنے سے اجتناب کریںوفاقی وزیر اور مسلم لیگ ن کے سینیئر رہنما سینیٹر مشاہد اللہ کا ایک نجی ٹی وی چینل سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ مسلم لیگ نون کی قیادت کی کوشش ہے کہ جمعے تک لاہور پہنچ جائیں۔سابق وزیراعظم کی روانگی سے قبل وزیراعظم خاقان عباسی اور ان کی کابینہ کے متعدد اراکین نے پنجاب ہاؤس میں ان سے ملاقات کی اور انھیں الوداع کیا۔
نواز شریف کا قافلہ اسلام آباد کے ڈی چوک سے فیض آباد اور پھر مری روڈ سے ہوتا ہوا جی ٹی روڈ سے لاہور کے سفر پر روانہ ہو گا۔اس موقع پر سکیورٹی اور ٹریفک کا خصوصی پلان ترتیب دیا گیا ہے۔
ٹریفک پلان کے مطابق نواز شریف کی ریلی کے دوران 600 ٹریفک پولیس اہلکار جن میں ایس ایس پی، ایس پی ٹریفک، چار ڈی ایس پیز اور 23 انسپیکٹرز شامل ہیں۔

kam

ٹریفک پلان کے مطابق جناح ایونیو ایکسپریس چوک سے ایف ایٹ ایکسچینج اور فیصل چوک سے کھنہ پل تک ایکسپریس ہائی وے ٹریفک کے لیے بند رہے گی۔اسلام آباد پولیس کے مطابق پنجاب ہاؤس اسلام آباد سے فیض آباد تک پولیس کے 2,500 اہلکار ریلی کے شرکا کو سکیورٹی فراہم کریں گے جبکہ 1,200 پولیس اہلکار نواز شریف کی سکیورٹی پر تعینات کیے گئے ہیں۔
مسلم لیگ نواز کے رہنما اور سینیٹر آصف کرمانی نے پنجاب ہاؤس کے باہر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ نواز شریف کچھ ہی دیر میں لاہور کے لیے روانہ ہونے والے ہیں۔
خیال رہے کہ نواز شریف نے وزیراعظم کے عہدے سے معزولی کے بعد بدھ کو لاہور جانے کے طے شدہ پروگرام میں تبدیلی کرتے ہوئے موٹر وے کے بجائے جی ٹی روڈ کے ذریعے لاہور جانے کا اعلان کیا تھا۔طے شدہ پروگرام کے مطابق سابق وزیر اعظم نے اتوار کو موٹر وے کے ذریعے لاہور پہنچنا تھا۔

142total visits,3visits today

Add a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *