hajj 3

پاکستان سمیت دنیا بھرسے 18لاکھ عازمین حج سعودی عرب پہنچ گئے

hajj
سعودی عرب میں دنیا بھر سے فریضہ حج کی ادائی کے لیے اٹھارہ لاکھ سے عازمینِ پہنچ گئے ہیں۔نیوز سعودی عرب کی نظامت عامہ برائے پاسپورٹس کے ڈائریکٹر جنرل ، میجر جنرل سلیمان الیحییٰ نے ایوان صنعت وتجارت جدہ میں ایک نیوز کانفرنس میں بتایا ہے 1650000 عازمین حج فضائی سفر کے ذریعے پہنچے ہیں۔ 88500 کی زمینی راستے سے آمد ہوئی ہے اور 14,800 سمندری راستے سے سعودی عرب پہنچے ہیں۔
انھوں نے مزید بتایا ہے کہ سعودی عرب سے تعلق رکھنے والے 134,000 شہری اور 109,000 غیر ملکی تارکینِ وطن حج کریں گے۔واضح رہے کہ اس سال حج کے لیے دنیا بھر سے بیس سے تیس لاکھ کے درمیان عازمین ِ حج کی مکہ مکرمہ میں آمد متوقع ہے۔
نظامت عامہ برائے پاسپورٹس کے مطابق اس نے مقدس مقامات کے لیے ٹرانسپورٹ کے شعبے میں 73,488 تارکین وطن کو لائسنس جاری کیے ہیں۔
سلیمان الیحییٰ کے بہ قول نظامت نے قانون کی خلاف ورزی پر پانچ گاڑیاں ضبط کر لی ہیں۔قانون توڑنے والے 375 افراد کو قید کی سزا سنائی ہے،22 پر جرمانہ عاید کیا ہے اور سترہ لاکھ سعودی ریال جرمانے کی شکل میں وصول کیے ہیں۔
ڈائریکٹر جنرل نے مزید بتایا ہے کہ ان کے محکمے نے سعودی عرب سے باہر سے جعل سازی کر کے آنے والے 64 کیس پکڑے ہیں۔یہ افراد پہلے مملکت میں مقیم رہے تھے اور وہ اب دوبارہ نئے نظام کے تحت داخل ہونے کی کوشش کررہے تھے۔
ان کے بہ قول یہ افراد سعودی عرب کے ہوائی اڈوں پر لمبی قطاروں میں لگنے کے بجائے عازمین حج کے روپ میں آرہے تھے۔
ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب میں عازمین حج کے تیزی سے داخلے کے لیے نئےنظام کا 1692 ملائشین شہریوں پر پہلی مرتبہ اطلاق کیا گیا ہے اور اس کے نتائج کا جائزہ لیا جارہا ہے۔اگر یہ تجربہ کامیاب رہا تو پھر اس کا دوسرے ممالک سے تعلق رکھنے والے عازمین پر بھی اطلاق کیا جائے گا۔
انھوں نے مزید بتایا کہ محکمہ پاسپورٹ نے چار چیک پوائنٹس قائم کیے ہیں جو چوبیس گھنٹے کام کررہے ہیں اور خواتین اہلکار بھی خواتین کی دستاویز چیک کررہی ہیں۔آیندہ خواتین مسافروں کو یہ اختیار دیا جائے گا کہ وہ مرد یا خاتون اہلکار سے اپنے کاغذات کی جانچ پڑتال کے لیے انتخاب کرسکیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں