4 6

شاہد خاقان کو شرم آنی چاہئے, وہ نا اہل شخص کو اپنا وزیر اعظم کہتے ہیں

4

اسلام آباد: چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ نواز شریف نے 300 ارب کا جواب نہیں دیا اس لئے ان کو نکالا گیا، شاہد خاقان کو شرم آنی چاہئے کہ وہ ایک نا اہل شخص کو اپنا وزیر اعظم کہتے ہیں ،مافیا لوگوں کو خرید لیتا ہے ،جب کسی کی قیمت نہیں لگتی تو اس کے خلاف کیسز بنائے جاتے ہیں ،مجھ پر دباؤ بڑھانے کے لئے کیسز بنائے گئے ہیں۔ نجی ٹی وی کو انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ نواز شریف پوچھتے ہیں کہ انہیں کیوں نکالا گیا؟ نواز شریف نے 300 ارب کا جواب نہیں دیا اس لئے انہیں نکالا گیا، انہوں نے کہا کہ پاکستان میں لوگ غیریقینی صورت حال کاشکار ہیں، نواز شریف لوگوں کو خرید لیتا ہے ،شریف خاندان نے دباؤ میں لانے کے لئے مجھ پر کیسز بنائے ،گاڈ فادر لوگوں کو خرید لیتے ہیں اگر کسی کی قیمت نہ لگے یا بکنے پر تیار نہ ہو تو اس پر دباؤ ڈالا جاتا ہے اور کیسز بنائے جاتے ہیں ۔عمران خان نے کہا کہ اقامہ ملک سے پیسہ باہر لے جانے کا طریقہ ہے ،نوازشریف اقامہ کے ذریعے ملک سے پیسہ باہرلے کرگئے ۔انہوں نے کہاکہ نوازشریف اور آصف زرداری نے باریاں لگائی ہوئی ہیں۔1985ء کے بعدملک میں رشوت بڑھی تو ملک زوال کا شکار ہونا شرو ع ہو گیا۔ جہانگیر ترین کی آف شور کمپنیاں جائز ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ٹیکس بچانے کے لئے آف شورکمپنیاں بنائیں ،میں نے بھی اپنی آف شور کمپنی ٹیکس بچانے کے لئے بنائی ہے جو قانونی ہے ۔پانامہ کی وجہ سے نواز شریف مانا کہ لندن فلیٹ ان کے ہیں ۔ابھی تک نہیں بتایا کہ فلیٹ کس کی ملکیت ہیں مریم کے ہیں یا حسین نواز کے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے بہت مایوس کیا، وزیر اعظم کہتے ہیں کہ نواز شریف ابھی بھی ان کے وزیر اعظم ہیں ،شاہدخاقان عباسی کو شرم آنی چاہئے کہ ایک شخص جس کو سپریم کورٹ کے ججز نے نا اہل کیا اس کو یہ اپنا وزیر اعظم کہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میر ی جنگ شریف خاندان کے خلاف نہیں ،میری جنگ کرپشن کے خلاف ہے ،اگر شریف خاندان پر منی لانڈرنگ ثابت ہو گئی تو ان کا بیرون ملک تمام کا تمام پیسہ اور پراپرٹی منجمد ہو جائے گی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں