lodra 116

لودھراں ضمنی انتخاب تحریک انصاف کے علی ترین کو شکسکت

لودھراں: قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 154 لودھراں کے ضمنی انتخاب میں غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے امیدوار کو تحریک انصاف کے امیدوار پر برتری حاصل ہے۔ پاکستان تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین کی نااہلی کے نتیجے میں خالی ہونے والی نشست حلقہ این اے 154 لودھراں کے ضمنی انتخاب میں اب تک 120 پولنگ اسٹیشن کے نتائج سامنے آگئے ہیں جس میں غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق مسلم لیگ (ن) کو تحریک انصاف پر برتری حاصل ہے۔مسلم لیگی امیدوار اقبال شاہ 42 ہزار 917 ووٹ لے کر پہلے اور پی ٹی آئی کے امیدوار علی خان ترین 28 ہزار 272 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔اس سے قبل ضمنی انتخاب کے لیے صبح 8 بجے پولنگ شروع ہوئی جو شام 5 بجے تک بغیر کسی وقفہ کے جاری رہی، پولنگ کا وقت ختم ہونے کے بعد ووٹوں کی گنتی جاری ہے۔حلقے سے تحریک انصاف، ن لیگ، پیپلز پارٹی سمیت 10 امیدوار مدمقابل ہیں جب کہ پی ٹی آئی کے علی ترین اور ن لیگ کے پیر اقبال شاہ میں کانٹے کا مقابلہ متوقع ہے۔ اس کے علاوہ پی پی پی کے مرزا محمد علی بیگ اور 7 آزاد امیدوار بھی میدان میں ہیں۔ علی ترین تحریک انصاف کے سابق سیکریٹری جنرل جہانگیر ترین کے بیٹے ہیں۔الیکشن کمیشن کے مطابق حلقہ این اے 154 میں 338 پولنگ اسٹیشنز قائم کیے گئے ہیں اور ان سب میں فوج کے جوان تعینات ہیں جنہیں مجسٹریٹ کے اختیارات بھی دیے گئے ہیں۔ ڈپٹی کمشنر لودھراں نے بتایا کہ حلقہ کے تمام پولنگ اسٹیشنز پر 4500 فوجی اور پولیس اہلکار تعینات کیے گئے ہیں۔الیکشن کمیشن کے اعداد و شمار کے مطابق لودھراں کے حلقہ این اے 154 میں کل ووٹرز کی تعداد 4 لاکھ 31 ہزار 2 ہے جن میں مرد ووٹرز 2 لاکھ 36 ہزار 496 اور خواتین ووٹرز کی تعداد 1 لاکھ 94 ہزار 506 ہے۔واضح رہے کہ قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 154 کی سیٹ پی ٹی آئی کے جہانگیر ترین کی نا اہلی کے بعد خالی ہوئی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں