news-pic-from-jamia-binoria 642

جامعہ بنوریہ عالمیہ : دورہ حدیث کے غیرملکی طالب علم کا انتقال

تھائی لینڈ کے شہرآتھویا(Ayutthaya)سے تعلق اور2 سال سے بنوریہ میں زیر تعلیم تھے
کراچی: معروف دینی درسگاہ جامعہ بنوریہ عالمیہ میں زیر تعلیم تھائی لینڈ کے طالب علم 25 سالہ محمد اخلاص ولدمحمد اسماعیل انتقال کرگئے، مرحوم کا تعلق تھائی لینڈ کے شہر ایوتھویا (Ayutthaya)سے اور2 سال سے جامعہ میں زیر تعلیم تھا، سانس کی تکلیف کے باعث ہسپتال میں زیر علاج تھا، نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعداہل خانہ کی اجازت سے حب کے قبرستان میں تدفین کردی گئی۔جامعہ بنوریہ عالمیہ کے ترجمان کے مطابق جامعہ بنوریہ عالمیہ آخری سال (دورہ حدیث ) میں زیر تعلیم محمد اخلاص(muhammad sakda)ولد محمد اسماعیل پانچ سال قبل دینی تعلیم کے حصول کیلئے پاسپورٹ نمبر AA1141263کے ذریعے پاکستان آیا ، دوسال سے جامعہ بنوریہ شعبہ غیر ملکی میں زیر تعلیم تھااورامسال آخری درجہ دورہ حدیث کا طالب علم تھا۔ تعلیمی سال مکمل ہونے میں دوماہ باقی تھے ، گزشتہ روز جب ان کی لاش جامعہ بنوریہ عالمیہ لائی گئی تو غم کی کفیت طاری ہوگئی،مرحوم کے ساتھیوں کے مطابق مرحوم انتہائی محنتی ، اساتذہ کی قدر کرنے والا طالب علم ، نماز جنازہ آہ سسکیوں کے ساتھ جامعہ کے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمدنعیم کی اقتدا ء بھی اد کردی گئی ،جبکہ جنازے میں تھالینڈ کے قونصل جنرل سمیت دیگر علماء طلبہ بھی کثیر تعداد میں شریک تھے ، بعد ازاں تدفین پاکستان کراچی حب چوکی کے قبرستان میں اہل خانہ کی اجازت سے کردی گئی۔انتقال پر جامعہ بنوریہ عالمیہ کے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمد نعیم سمیت دیگر اساتذہ وطلبہ نے گہرے رنج وغم کا اظہاراور لواحقین سے ہمدردی کا اظہاراور تھائی لینڈ کے قونصل جنرل سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے مرحوم کیلئے دعائے مغفرت اور لواحقین کیلئے صبر جمیل کی دعا کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں